صفحہ اول / اردو ادب / جواب شکوہ بند نمبر 17 ۔۔۔ عرفان صادق

جواب شکوہ بند نمبر 17 ۔۔۔ عرفان صادق

جواب شکوہ بند نمبر 17

سلسلہ اقبالیات از عرفان صادق 

شور ہے ہو گئے دنیا سے مسلماں نابود
ہم یہ کہتے ہیں کہ تھے بھی کہیں مُسلم موجود؟
وضع میں تم ہو نصارٰی، تو تمدّن میں ہنود
یہ مسلماں ہیں! جنہیں دیکھ کے شرمائیں یہود!
یوں تو سید بھی ہو، مرزا بھی ہو، افغان بھی ہو
تم سبھی کچھ ہو، بتاؤ تو مسلمان بھی ہو؟

⭕کتاب: بانگِ درا
نظم: جوابِ شکوہ
بند نمبر 17

♨مشکل الفاظ:
نابود۔۔۔ناپید،ختم،غائب
وضع۔۔۔شکل
نصارٰی۔۔۔عیسائی
تمدّن۔۔۔زندگی گزارنے کے طور طریقے
ہنود۔۔۔ہندو
یہود۔۔۔یہودی
سید۔۔۔سردار
مرزا و افغان۔۔۔ذاتیں،قبائل

💢مفہوم:
دنیا میں ہر طرف یہ چرچا ہے کہ مسمان ناپید ہو گئے مگر ہمارا یہ مؤقف ہے کہ کیا دنیا میں کبھی ملّتِ اسلامیہ نام کی کوئی ملّت موجود بھی تھی؟
اگر تمہاری زندگیوں پر نگاہ دوڑائی جاۓ تو تم اپنے حُلیے اور شکل و صورت سے عیسائی نظر آتے ہو جبکہ رہن سہن کے طریقوں میں ہندوؤں کی تقلید کر رہے ہو۔تمہاری حالت تو یہ ہو چکی ہے کہ تمہیں دیکھ کے یہود بھی شرم سے مَر مٹیں۔
یوں تو دیکھا جاۓ تو تم فرقہ بندی اور گروہوں میں اس قدر بٹ چکے ہو کہ تم میں سید، مرزا، افغان غرضیکہ ہر قبیلہ موجود ہے مگر اس ذات پات کے چکر سے نکل کر یہ بھی بتاؤ کہ کیا تم کہیں سے مسمان بھی نظر آتے ہو؟

متعلقہ محمد نعیم شہزاد

.......................... محمد نعیم شہزاد ایک ادبی، علمی اور سماجی شخصیت ہیں۔ لاہور کے ایک معروف تعلیمی ادارہ میں انگریزی زبان و ادب کی تعلیم دیتے ہیں۔ اردو اور انگریزی دونوں زبانوں میں نظم اور نثر نگاری پر قادر ہیں۔ ان کی تحاریر فلسفہ خودی اور خود اعتمادی کو اجاگر کرتی ہیں اور حسرت و یاس کے موسم کو فرحت و امید افزاء بہاروں سے ہمکنار کرتی ہیں۔ دین اسلام اور وطن کی محبت ان کی روح میں بسی ہے۔ اسی جذبے کے تحت ملک و ملت کی تعمیر و ترقی میں پیش پیش رہتے ہیں۔

تجویز کردہ

نوائے اقبال شرح بانگِ درا (ہمالہ بند 6)

آتی ہے ندّی فرازِ کوہ سے گاتی ہوئی کوثر و تسنیم کی موجوں کو شرماتی …

نوائے اقبال شرح بانگِ درا (ہمالہ بند 5)

جنبشِ موجِ نسیم صبح گہوارہ بنی۔۔۔ا جھومتی ہے نشہء ہستی میں ہر گل کی کلی۔۔۔! …

Send this to a friend