صفحہ اول / Uncategorized / سعودی ولی عہد کا دورہ اور ٹویٹر تبصرے

سعودی ولی عہد کا دورہ اور ٹویٹر تبصرے

ولی عہد کا دورہ اور ٹویٹر کی سیر ..

تحریر : فیضان فیصل

سعودی ولی عہد کے دورے پر پاکستانی حکام و عوام کا جوش و جذبہ تو ہم سب نے دیکھا. لیکن ٹویٹر پر بھی ایک عجب ہی دنیا آباد تھی. گو کہ میں ٹویٹر کا تقریبا خاموش صارف ہوں مگر آج بہت دیر تک ٹویٹر گردی کی. حکومتِ پاکستان نے عربی میں ٹویٹ کی ہوئی تھی اور سعودی وزارتِ خارجہ نے اس کا اردو میں جواب دیا. دیگر بھی خیر سگالی کی رسمی باتیں, تشکر و تقدیر کے کلمات دونوں طرف کے عوام اور حکام کرتے رہے اور استقبالی لمحات کی تصاویر اور ویڈیوز تو بے دریغ شئیر ہوئیں. اللہ کرے کہ یہ دو طرفہ تعلقات عالمِ اسلام کیلیے نفع مند ثابت ہوں.

ٹویٹر گردی کے دوران جو کچھ سامنے آیا, اس میں سے کچھ آپ بھی ملاحظہ فرمائیں :

•• سعودی 🇸🇦 صحافی منصور الخمیس نے ٹویٹ کی :

"غیر عرب ممالک میں سے سعودی عرب کے سب سے ذیادہ قریب پاکستان ہے. پیو تھنک ٹینک کے مطابق 95 فیصد پاکستانی سعودیہ کو بے پناہ چاہتے ہیں.
پاکستان کی فوج دنیا کی بڑی افواج میں سے ایک ہے اور پاکستان عالمِ اسلام کی واحد ایٹمی قوت ہے.”

جی ہاں! ان کا مان ایٹمی پاکستان اور اس کی افواج ہیں.

•• معروف شخصیت ڈاکٹر علی العراقی 🇮🇶 جن کے فالوورز ایک لاکھ سے زائد ہیں, انہوں نے ٹویٹ کی :

"پاکستان انڈونیشیا کے بعد دوسری بڑی اسلامی ریاست, ایک ایٹمی قوت اور با رعب مملکت ہے. پاکستان نے جنگی جہازوں کے ذریعے ولی عہد کا استقبال کیا ہے اور سڑکوں کو خادم الحرمین الشریفین کی تصویروں سے سجا رکھا ہے. پس ہمارا یہ حق ہے کہ ہم ان پر فخر کریں جو عرب کی قدردانی کرتے ہیں اور سعودیہ کی اسلامی قیادت سے محبت کرتے ہیں, نہ کہ ان پر جنہوں نے عربوں کو دربدر کیا, اور ان کے علاقوں پر قابض ہو گئے اور حرمین کے خلاف سازشوں میں مصروف ہوئے.”
پاکستان کا شکریہ!

اچھا بڑی شخصیات پر بات کی تو طویل ہو جائے گی. اپنے جیسے عوام الناس کو دیکھتے ہیں :

•• محمد الشمری نامی سعودی 🇸🇦 باشندے نے حکومت پاکستان کے آفیشل اکاؤنٹ کی ٹویٹ کے رپلائی میں ایک بات لکھی ہے جس سے سیروں خون بڑھ گیا. یقینا یہ ہر فرد کی سوچ نہیں ہو گی مگر ایک فرد کی بھی ہو تو ہزار غنیمت ہے! کہتا ہے :

"سعودیہ اور پاکستان کے گہرے تعلقات ہیں جن کی شاندار تاریخ ہے. اور اس تعلق کی بنیاد اخوتِ اسلامی اور دیگر ایسی مضبوط بنیادیں ہیں جو کبھی ختم نہیں ہو سکتی. رہا ولی عہد کا قریبی ریاستوں جیسے ہندوستان وغیرہ کا دورہ تو یہ صرف اقتصادی مصلحتوں اور سیاسی دوستیوں کی وجہ سے ہے جو کبھی بھی پاکستان سے ہمارے سچے تعلق کے برابر نہیں ہو سکتا ..”

میں تو کہتا ہوں اس کے رپلائی کو سارے نہ صرف ری ٹویٹ کریں بلکہ اس نیک روح کا شکریہ بھی ادا کریں.

•• بدر نامی ایک شہری 🇸🇦 کا جواب یوں تھا :

"بے مثال مہمان نوازی پر شکریہ. اب ہمیں سمجھ آ گئی ہے کہ سعودی بادشاہ پاکستان سے اتنی محبت کیوں کرتے ہیں !!”

واضح رہے کہ سعودیہ کے تمام فرمانرواؤں نے وطنِ عزیز کا دورہ کر رکھا ہے.

•• ایک فلسطینی بلال الصباح 🇵🇸 نے ٹویٹ کی. اور ٹویٹ کیا کی جگر چیر کر رکھ دیا. کہتا ہے :

"سعودیہ پولینڈ میں ہمارے حقوق کے دفاع سے لے کر پاکستان ست تعلقات کی مضبوطی تک!
کاش ہم پاکستانیوں سے عالیشان استقبال اور حسنِ ظن رکھنا سیکھ سکیں بجائے گالیوں اور خیانتوں کے!
سعودیہ نے جتنا فلسطین کیلیے کیا ہے شاید اس کا چوتھائی بھی پاکستان کیلیے نہ کیا ہو مگر ہم ان اعلی اقدار کو کھو چکے ہیں ..”

اس ٹویٹ میں ایک تیر سے کئی شکار کیے گئے ہیں اور سب تیر کارگر ہیں. اس بندے کو سرخ سلام! اس ٹویٹ کے رپلائیز بھی ملاحظہ کیے جانے چاہییں.

•• اسی طرح ابو عبد اللہ نامی ایک مصری 🇪🇬 ڈاکٹر علی العراقی کی ٹویٹ کے جواب میں کہتا ہے :

"اللہ سے دعا ہے کہ سعودیہ, مصر اور پاکستان کی حفاظت فرمائے. بیشک سعودیہ اور پاکستان اس وقت امتِ اسلامیہ کیلیے ڈھال ہیں!”

یہ بات بہت سے نو خیز پیٹریاٹس نہیں جانتے کہ مصر اپنی جغرافیائی اہمیت کے اعتبار سے پاکستان سے ذیادہ نہیں تو کم اہمیت کا حامل بھی نہیں. اپنی دعاؤں میں مصر کو بھی شامل رکھا کریں.

•• نوجوان طالب علم 🇸🇦 عبد العزیز الغوینم کی خوبصورت ٹویٹ نے بھی مزہ دیا :

"وہ چیزیں جو صرف پاکستان اور پاکستانیوں میں ملتی ہیں :مضبوط ترین فوج, پیار, دوستی, تعلیم, محبت, ذہانت, مسکراہٹ, اعتماد, بھائی چارہ اور چکن کڑاہی…”

یہ چند نمونے ہیں. اور بہت کچھ تھا. کوئی پاکستانی اکاؤنٹس جنہوں نے شہزادے کی تصویر سجا رکھی تھی, ان کے اسکرین شاٹس شئیر کر رہا تھا اور کوئی اکاؤنٹس کے لنکس شئیر کر کے کہ رہا تھا کہ ان پاکستانی بھائیوں پر شر پسند عناصر نے گھیرا کیا ہوا ہے, آؤ مدد کریں.. اور بھی بہت کچھ دیکھا. ایک نے تصویر لگائی ہوئی تھی کہ دیکھو آج پاکستان کے چاروں ٹاپ ٹرینڈز ولی عہد کے دورے کے متعلق ہیں. #شكراباكستان اور #باكستانترحبلمحمدبن_سلمان وغیرہ کے ٹرینڈز بھی چلتے رہے.

ایسا نہیں کہ سبھی کچھ اچھا تھا. کچھ پھپھے کٹنیاں ہر جگہ ہوتی ہیں جو ہر اچھے موقع پر ماضی لے کر بیٹھ جاتی ہیں. بہت سے کہ رہے تھے کہ پاکستان نے یمن کیلیے فوج کیوں نہ بھیجی اور دلچسپ بات یہ کہ عرب خود ہی انہیں جواب دے رہے تھے. خیر ہمارے مسلک میں عالمِ اسلام کی منفی رپورٹنگ حرام ہے. الحمد للہ.

بہرحال بہت مزہ آیا آج ٹویٹر کی سیر کر کے. پاکستان سے لا زوال محبت میں ایک سنہرے باب کا اضافہ ہو گیا…
پاکستان زندہ باد 🇵🇰✊💚

(زیرِ تعمیر دانشور : فیضان فیصل)

متعلقہ محمد نعیم شہزاد

.......................... محمد نعیم شہزاد ایک ادبی، علمی اور سماجی شخصیت ہیں۔ لاہور کے ایک معروف تعلیمی ادارہ میں انگریزی زبان و ادب کی تعلیم دیتے ہیں۔ اردو اور انگریزی دونوں زبانوں میں نظم اور نثر نگاری پر قادر ہیں۔ ان کی تحاریر فلسفہ خودی اور خود اعتمادی کو اجاگر کرتی ہیں اور حسرت و یاس کے موسم کو فرحت و امید افزاء بہاروں سے ہمکنار کرتی ہیں۔ دین اسلام اور وطن کی محبت ان کی روح میں بسی ہے۔ اسی جذبے کے تحت ملک و ملت کی تعمیر و ترقی میں پیش پیش رہتے ہیں۔

تجویز کردہ

گھر کی خاطر

آج میں بہت غمگین تھا کیوں کہ ہم نے بیرونی دباؤ کی خاطر ، ہمیں …

تنظیمی کلچر

زیادہ دن پرانی بات نہیں ایک لنڈے کے کامریڈ سستے انقلابی کو سمجھا رہا تھا …

Send this to a friend