صفحہ اول / بلاگرز فورم / سوشل میڈیا اور جلد باز دانشور

سوشل میڈیا اور جلد باز دانشور

 سوشل میڈیا اور جلد باز دانشور

تحریر: عبدالواحد

26 فروری کی صبح !

بھنگ پی کر سو رہے تھے۔۔۔۔
ایک طیارہ نہیں گرتا ان سے اور جواب دینے کی دھمکیاں لگا رہے ہیں۔
بہت نقصان کردیا انڈیا نے 300 بندے مار دیئے۔۔۔
میراج لائے تھے وہ بڑا طاقت ور طیارہ تھا۔۔۔۔
انڈیا نے بڑی بہادری دکھائی ہے۔۔۔
سیاست میں ہر وقت کودے رہیں گے تو کیا خاک لڑیں گے۔۔۔۔
انڈیا کی ایئر فورس بڑی طاقت ور ہے۔۔۔
ہم تو پہلے ہی کہتے تھے کہ ان کے بس کا کام نہیں انڈیا سے لڑنا۔۔۔۔۔
اتنا بجٹ کھا جاتے ہیں اور انڈین طیاروں کو ریڈار پر بھی نہ دیکھ سکے۔۔۔۔
مسلم ممالک نے ہمارا ساتھ کیوں نہیں دیا۔۔۔؟؟؟
اقوام عالم تو انڈیا کیساتھ کھڑے ہیں۔۔
غرض کے بھاؤ بھاؤ بھاؤ۔۔۔۔۔۔۔۔!

*پاکستانیوں کا جواب*

انتظار کرو اور دیکھو اتنی جلدی فیصلہ نہ کیا کرو۔۔۔۔

جواب ! ۔۔۔۔۔بھاؤ بھاؤ بھاؤ۔۔۔۔۔

27 فروری کی صبح !

کمال کردیا یار زبردست۔۔۔
عوامی پریشر تھا جواب تو دینا تھا۔۔۔۔۔
خوب ٹریپ کیا انڈیا کو اگر ہم ایک دن پہلے غلطی کرتے تو جو انڈیا کیساتھ ہوا وہ ہمارے ساتھ ہو جاتا۔۔۔۔
حسن کراچی کا ہے اپنا مہاجر ہے۔۔۔
ابھی نندن کو پکڑنے والا سندھی ہے/بلوچ ہے۔۔۔۔۔۔
اپنے پنجاب کے گبرو جوان ہیں۔۔۔۔
حسن ہمارے کزن کا سینئر کلاس فیلو ہے فلاں اسکول سے ہے۔۔۔۔۔
عمران خان کا کوئی کمال نہیں پاک ایئر فورس انڈیا سے بہتر ہے۔۔۔۔۔
انکی بہادری تو دیکھو ایک بار پھر گھس کر آ رہے تھے۔۔۔۔
ہم نے ہی گرائے ہیں یا تکنیکی خرابی سے گرے ہیں۔۔۔۔
یہ ابھی نندن کو چائے کیوں پلا رہے ہیں بڑے بے شرم ہیں۔۔۔۔۔
ابھی نندن نے تعریف تو کرنی ہی تھی پاکستان کی ورنہ فوجی جوتے نہیں مارتے۔۔۔۔۔
غرض کہ بھانت بھانت کی باتیں لیکن ان باتوں میں پاکستان کی حمایت، قوم کا مورال بڑھانے کا جذبہ، پاک فوج کی حمایت، برے وقت میں حکومت کی حمایت، کہیں موجود نہیں، خوشی کے آنسو، مصیبت پر صبر، اپنے بہادروں کیلئے دعا سب غائب۔

28 فروری !

وزیر اعظم کا بیان
"ہم انڈین پائلٹ کو چھوڑ رہے ہیں”

جواب: دنیا کیا کہے گی ڈر گئے؟؟؟
وہ ہمارے قیدیوں کو ماریں اور ہم ان کے قیدی کو وی آئی پی پروٹوکول دیں؟؟؟
تفتیش تو کر لیں اتنی جلدی کیوں چھوڑ رہے ہیں؟؟؟
یہودی ایجنٹ ہے ناں چھوڑے گا ہی۔۔۔۔
غرض کہ بھاؤ بھاؤ بھاؤ۔۔۔۔۔۔۔

دوسری جانب!
دنیا بھر میں پاکستان کی عزت میں اضافہ، تعریفی پیغامات کا ڈھیر، پاکستان کی اخلاقی فتح کا انڈیا میں بھی پرچار. سدھو ہربھجن، و دیگر کا پاکستان کے اقدام کو سراہنا وغیرہ

جھانکئے اپنے گریبان میں آپ کون ہیں؟ کیا کر رہے ہیں؟ کیا ایک محب وطن ایسا ہوتا ہے؟ کیا آپ جنگی حکمت عملی کے بارے میں جانتے ہیں؟ کیا آپکو ڈپلومیسی کے بارے میں کچھ پتا ہے؟؟ کیا آپکی حب الوطنی بس اپنوں پر ہی نشتر برسانے کا نام ہے؟

یہ ساری باتیں پچھلے دو دنوں میں لوگوں کی زبانی با نفس نفیس سن چکا ہوں. آپکے مندرجہ بالا ہر سوال کا جواب قوم دے سکتی ہے، لیکن اتنا جواب دینا کافی ہوگا کہ "جس کا کام اسی کو ساجھے”

آپ جائیں جا کر اپنی نوکری، دکان، مکان، بچے دیکھئے، اس وطن کو اس کے بیٹے خود ہی سنبھال لیں گے۔۔۔
آپ صرف وطن کی اتنی سی خدمت کردیجئے اپنی زبان بند رکھیے اپنے کم عقل دماغ چلانا بند کر دیجئے۔

اللہ رب العزت پاکستان کو عزتیں دے رہا ہے، یہ وطن جلد خوشحال و مضبوط پاکستان بن کر ابھرے گا، اور آپ ہلدی و پھٹکری لگائے بغیر بھی گردن اکڑا کر اپنا تعارف کروا رہے ہون گے۔ کہ ہم پاکستان سے ہیں۔ لیکن اس پاکستان کو عظیم سے عظیم تر بنانے میں جن کا ہاتھ ہوگا وہ آپکو سوشل میڈیا پر نمبر بناتے نہیں دکھائی دینگے، کیونکہ وہ ریٹنگ گیم کا حصہ نہیں وہ تو اپنے رب کا شکر ادا کر رہے ہونگے بس۔۔۔۔۔۔!

متعلقہ محمد نعیم شہزاد

.......................... محمد نعیم شہزاد ایک ادبی، علمی اور سماجی شخصیت ہیں۔ لاہور کے ایک معروف تعلیمی ادارہ میں انگریزی زبان و ادب کی تعلیم دیتے ہیں۔ اردو اور انگریزی دونوں زبانوں میں نظم اور نثر نگاری پر قادر ہیں۔ ان کی تحاریر فلسفہ خودی اور خود اعتمادی کو اجاگر کرتی ہیں اور حسرت و یاس کے موسم کو فرحت و امید افزاء بہاروں سے ہمکنار کرتی ہیں۔ دین اسلام اور وطن کی محبت ان کی روح میں بسی ہے۔ اسی جذبے کے تحت ملک و ملت کی تعمیر و ترقی میں پیش پیش رہتے ہیں۔

تجویز کردہ

ہائےآمریت تجھے کیا رونا ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ قسم سے ، مجھےتو اب جمہوریت سے بھی ڈر لگتا ہے

ہاں ہاں ابھی بچگانہ ذہن تھا ۔گھر والوں کا پیٹ پالنے کےلیے محنت مزدوری کا …

عالمی امن پر منڈلاتے خطرات

آپ بھی جان لیں کہ اقوام متحدہ کی مستقل رکنیت رکھنے والے ممالک کے مابین 145 …

Send this to a friend