صفحہ اول / اسلامک بلاگز / میٹھے بول ۔۔۔ حامد المجيد

میٹھے بول ۔۔۔ حامد المجيد

میٹھے بول میں جادو ہے
ازقلم: حامد المجید


یہ اک ایسی حقیقت ہے جس کا کوئی انکار نہیں کرسکتا کہ میٹھے بول جادو کی مانند ہوتے ہیں۔۔۔
والدین کے میٹھے بول اک بچے کی بہترین پرورش میں بہت کارگر ثابت ہوتے ہیں۔۔ کیونکہ بچے ڈانٹ ڈپٹ سے زیادہ محبت و الفت کے متلاشی ہوتے ہیں۔۔۔۔
استاد کے میٹھے بول بچے کی تعلیم و تربیت پر اک گہرا اثر چھوڑتے ہیں جن کے سہارے وہ زندگی کی بڑی بڑی منازل آسانی سے طے کر لیتا ہے۔۔۔۔
قارئین کے میٹھے بول اک لکھاری کے قلم کے لیے سانسوں کا کام کرتے ہیں جن سے قلم کا وجود زندہ رہتا ہے اور اس کی توانائی میں دن بدن اضافہ ہوتا رہتا ہے۔۔۔۔
طبیب کے میٹھے بول اک مریض کے لیے نئی زندگی کا سبب بنتے ہیں۔۔ جس سے صحت و تندرستی کی امید کا پنچھی زندگی کی بلند فضاؤں میں رقص کرنے لگتا ہے۔۔۔۔
میٹھے بول اک غم میں ڈوبے انسان کے لیے تیرنے کا سبب بن سکتے ہیں اور اس رنج و الم کے بہتے سمندر سے اسے نکال سکتے ہیں۔۔۔۔
میٹھے بول آنکھوں میں آنسوؤں کا سمندر لیے انسان کے لیے بَند کا کام کرسکتے ہیں ۔۔۔
میٹھے بول جادو کی طرح ہی ہوتے ہیں اور یہ ایسا جادو ہے جس کا اثر تا حیات قائم رہتا ہے۔۔۔
اور یہ جادو تبھی اثر کرتا ہے جب اس میں خلوص ہو محبت و الفت کا نہ تھمنے والا سمندر ہو منافقت کا چھوٹا سا زرہ بھی نہ ہو۔۔
میٹھے بول کا جادو زیادہ دیر قائم نہیں رہتا اگر اس میں منافقت ہو کیونکہ میٹھے بول کا جادو اک وسیع وعریض لہلاتی سرسبزو شاداب فصل کی طرح ہے اور یہ منافقت،مفاد پرستی،بناوٹی رشتے یہ ماچس کی تیلی کی مانند ہیں اور لہلاتی فصل کو اک تیلی ہی راکھ کر دیتی ہے۔۔۔۔
معاشرے میں انسان کی پہچان اس کے جسم اس کی ظاہری صورت سے ہوتی ہے۔۔
مگر اس کے اقوال و افعال اس کے خاندان کی پہچان بتاتے ہیں۔۔ اس کی تربیت کی عکاسی کرتے ہیں۔۔۔
اسی لیے اپنے دل اور اس کی ترجماں زبان کو ہمیشہ محبت، عزت واحترام کا گہوارہ بنا کے رکھنا چاہیے۔۔۔
پریشانی کے عَالَم میں انسان دو لوگوں کو کبھی نہیں بھولتا اک وہ جو اسے اپنے میٹھے لفظوں سے سہارا دیتے ہیں اس کے آنسوؤں کا مداوا کرتے ہیں چاہے وہ قولی انداز میں کریں یا فعلی انداز میں۔
ایسے لوگ بعد میں اس کی دعاؤں میں جگہ بنا لیتے ہیں اور انسان کے لیے اس سے بڑی کامیابی نہیں کہ وہ کسی کی دعاؤں میں اپنے جگہ بنا لے۔۔۔
اور دوسرا وہ جو اس کے آنسوؤں کا مداوا نہیں کرتا اس مشکل وقت میں اس کا ساتھ نہیں دیتا اور ایسے لوگوں کا خیال جب بھی دل میں آتا ہے اک درد سا ہوتا ہے دبے گئے زخم پھر اجاگر ہو جاتے ہیں۔۔۔
اللہ تعالیٰ نے آپکو زبان دی ہے اس کا بہتر سے بہتر استعمال کریں اس سے محبت کی روشنی بکھیریں اور یہ ایسی روشنی ہے جس کے بعد ظلمتوں کا ڈر نہیں ۔۔۔
اور میٹھے بول بولتے رہیں یہ ایسا جادو ہے جس کے حصار کو کوئی پریشانی نہیں توڑ سکتی مگر اس میں خلوص کا ہونا لازمی ہے۔۔۔
یاد رکھیں آپ کے میٹھے بول کسی کی امید نو بھی بن سکتے ہیں۔۔۔۔

متعلقہ محمد نعیم شہزاد

.......................... محمد نعیم شہزاد ایک ادبی، علمی اور سماجی شخصیت ہیں۔ لاہور کے ایک معروف تعلیمی ادارہ میں انگریزی زبان و ادب کی تعلیم دیتے ہیں۔ اردو اور انگریزی دونوں زبانوں میں نظم اور نثر نگاری پر قادر ہیں۔ ان کی تحاریر فلسفہ خودی اور خود اعتمادی کو اجاگر کرتی ہیں اور حسرت و یاس کے موسم کو فرحت و امید افزاء بہاروں سے ہمکنار کرتی ہیں۔ دین اسلام اور وطن کی محبت ان کی روح میں بسی ہے۔ اسی جذبے کے تحت ملک و ملت کی تعمیر و ترقی میں پیش پیش رہتے ہیں۔

Send this to a friend

Hi, this may be interesting you: میٹھے بول ۔۔۔ حامد المجيد! This is the link: https://pakbloggersforum.org/%d9%85%db%8c%d9%b9%da%be%db%92-%d8%a8%d9%88%d9%84%d8%8c-%d8%ad%d8%a7%d9%85%d8%af-%d8%a7%d9%84%d9%85%d8%ac%d9%8a%d8%af/