صفحہ اول / بلاگرز فورم / پاکستان کی خیر خواہ تنظیم، ایف آئی ایف

پاکستان کی خیر خواہ تنظیم، ایف آئی ایف

پاکستان کی خیر خواہ تنظیم

(ایف آئی ایف)

تحریر: ام ابیہا صالح جتوئی

ہم نے مانا کہ تغافل نہ کرو گے لیکن
خاک ہو جائیں گے ہم تم کو خبر ہونے تک

پاکستان میں جب بھی کوئی قدرتی آفت اس کے باسیوں کو اپنی لپیٹ میں لے لیتی ہے تو اس وقت درد میں ڈوبے متاثرہ لوگوں کی نظریں کسی مسیحا کی منتظر ہوتی ہیں اور ان کی مدد کے لئے سب سے پہلے یہ جماعت پہنچتی ہے۔
زلزلہ آتا ہے یا پھر کوئی حادثہ پیش آتا ہے تو ان لوگوں کی مدد کو پہنچنے والی یہ جماعت جو کہ ایک فلاحی تنظیم ہے صف اول ہوتی ہے۔
لوگوں کی خدمت اور مدد میں پیش پیش ہوتی ہے۔

یہ ایک محب وطن اور پاکستان کے دفاع کے لئے لڑنے والی جماعت ہے۔
پاکستان کے چپے چپے کی حفاظت اور نگرانی کو اپنا فرض عین سمجھتی ہے۔
اس جماعت کا ہر کارکن اسلامی اصولوں پر چلنے کے ساتھ ساتھ اپنے وطن سے پیار اور اس وطن کے لوگوں سے بے حد مخلص اور محبت کرنے والا ہے۔
یہ تنظیم اپنے وطن کی حفاظت کے لیے کسی بھی قسم کی قربانی سے دریغ نہیں کرتی۔
یہی پاکستان کی نمبر ون جماعت ہے جو کہ پاکستان کے پسماندہ علاقے مثلا صحرا اور ریگستان کے بیابانوں میں بسنے والے لوگوں تک خوراک پانی اور ادویات فراہم کرتی ہے سردیوں کی یخ بستہ ہوائیں ہوں یا گرمیوں کی جھلسا دینے والی دھوپیں…!!
ان کے جذبے کو کم نہیں کرتی یہ جماعت حالات کا مقابلہ کرتی ہے اور اپنے رب پر بھروسہ رکھ کر انسانیت کی خدمت میں مصروف رہتی ہے۔

اس جماعت کی خدمت کا ایک چھوٹا سا واقعہ پیش کرتی ہوں ایک علاقے میں مسلسل بارشیں ہونے کی وجہ سے پانی بہت بڑھ گیا تھا وہاں ایک بہت ہی غریب خاندان مقیم تھا۔
سرد رات کے آخری پہر جب سبھی اپنے نرم گرم بستروں میں گہری نیند سو رہے ہوتے ہیں…اچانک وہاں شدید ٹھنڈ کے باعث چھوٹی بچی کی طبیعت خراب ہو جاتی ہے اس کی ماں مچھلی کی طرح تڑپنے لگتی ہے اور اپنے رب سے فریاد کرنے لگ گئی اور ادھر ادھر مدد کے لیے کسی کو پکارنے لگی لیکن اس نے کسی کو نہیں پایا۔
اسی اثناء میں اس انسانیت کی خدمت گزار جماعت کے وفادار کارکن وہاں گشت کرتے پھر رہے تھے کہ اگر کسی کو مدد کی ضرورت ہو تو وہ اس کی مدد کریں۔
انہوں نے اس ماں کی مدد کی اور بچے کو ہسپتال تک پہنچایا اور اس ہسپتال پہنچنے تک کا سفر پانی کے اندر جس قدر مشکلات میں انہوں نے طے کیا اس کی خبر ایک نجی ٹی وی چینل نے بھی دکھائی کے کس طرح اس جماعت کے لوگ کس کس طرح کی مشکلات جھیل کر لوگوں کی مدد کررہے ہیں۔
اور ان کے کام کو سراہا گیا پھر بھی اس جماعت کو دہشت گرد کہا جاتا ہے اور کالعدم قرار دیا جاتا ہے۔
مجھے فخر ہے اس جماعت پر کہ ملک کو جب بھی ان کی ضرورت پڑتی ہے تو ان کے کارکنان اپنی جان ہتھیلی پر رکھ کر حاضر ہو جاتے ہیں۔

جب بھی اہل چمن کو ضرورت پڑی

خون ہم نے دیا گردنیں پیش کیں
پھر بھی کہتے ہیں ہم سے یہ اہل چمن
یہ چمن ہے ہمارا تمہارا نہیں

اس جماعت کے کسی ایک بھی کارکن نے جذباتی ہو کر حکومت کے خلاف کوئی قدم نہیں اٹھایا ، کوئی نعرہ بازی نہیں کی ، کوئی دھرنا نہیں دیا ، کوئی توڑپھوڑ نہیں کی اور نہ ہی کوئی راستے بلاک کیے….!!!

یہ جماعت ہمیشہ سے مشکل حالات میں اپنے رب سے رجوع کرتی ہے اور اس کے بعد اپنے ملک کی عدالتوں کی طرف رجوع کرتی ہے کبھی بھی قانون کو اپنے ہاتھ میں نہیں لیتی اور پہلے کی طرح اس دفعہ بھی قانون کا ساتھ لے گی اور سرخرو ہوگی۔
ان شاءاللہ

کشمیر جو کہ پاکستان کی شہ رگ ہے دشمنوں کے پنجہ میں ہے کشمیر پر ہندو بنیا مظالم کی انتہا کر چکا ہے ہمارے مسلمان بھائیوں کے ساتھ خون کی ہولی کھیل رہا ہے تو ان کشمیریوں کا درد بھی اس جماعت کو ہوتا ہے یہ اس ظلم کو روکنے کے لئے مظلوموں کی مدد کرتی ہے انسانیت پر ظلم ڈھانے والے لوگ دندناتے پھر رہے ہیں لیکن ان پر اقوام عالم کی طرف سے پابندیاں نہیں آتیں اور نہ ہی کوئی بیرونی دباؤ آتا ہے ۔

ہم آہ بھی کرتے ہیں تو ہو جاتے ہیں بد نام
وہ قتل بھی کرتے ہیں تو چرچا نہیں ہوتا

اس جماعت کی قربانیاں اور محبتیں کسی سے ڈھکی چھپی نہیں ہیں ان کا مقصد صرف اور صرف پاکستان کی حفاظت اور اس کے لوگوں کی خدمت کرنا ہے جب بھی دشمن اس وطن پر میلی آنکھ سے دیکھتا ہے تو یہ جماعت حکومت وقت اور اپنی افواج کے ساتھ سیسہ پلائی ہوئی دیوار کی طرح کھڑی ہوجاتی ہے اس جماعت نے ملک سے را،ٹی ٹی پی اور کلبھوشن جیسے ناسور کے خاتمے کے لیے اپنی فوج کے شانہ بشانہ کھڑے ہو کر مدد کی۔
ملک کے خلاف سازشیں کرنے والی تنظیموں کا پردہ فاش کیا اور ان کے خاتمے کیلئے اہم اقدامات میں مدد کی۔
پاکستان کے لوگوں میں جذبہ حب الوطنی اجاگر کیا اور پاکستان کے نظریہ کا تحفظ کرنا سکھایا۔
لوگوں میں اس قدر شعور کو اجاگر کیا کہ آج پوری قوم اور اس کا ہر بچہ بچہ حکومت وقت اور اپنی افواج کے ساتھ کھڑا ہے۔
یہ جماعت اس وقت آزمائش اور مشکل وقت میں ہے۔
لیکن اس کے باوجود اس کے کارکنان کی ان کے امیر محترم نے ان کی ایسی تربیت کی ہے کہ وہ اپنی مشکلات کا رونا دھونا شروع نہیں کرتے اور نا ہی الزام تراشیوں پر آجاتے ہیں…!!
بلکہ صبر استقامت کے ساتھ ایسے نازک حالات کا مقابلہ کرتے ہیں۔

ایسے حالات میں یہ جماعت پاکستان اور حکومت وقت اور اپنی فوج کا بھرپور ساتھ دیے گی اور ملک کی ترقی کے لیے اپنی ذمہ داریاں احسن طریقے سے انجام دے گی۔

ان شاءاللہ عزوجل

ہمت ہے بلند اپنی جذبے ہمارے سچے ہیں
ہم شہدا کے وارث ہیں ہم سلف صالحین کے بچے ہیں

اللہ ہمارا حامی و ناصر ہو اور ملک پاکستان کی حفاظت فرمائے…
آمین یارب العالمین

متعلقہ محمد نعیم شہزاد

.......................... محمد نعیم شہزاد ایک ادبی، علمی اور سماجی شخصیت ہیں۔ لاہور کے ایک معروف تعلیمی ادارہ میں انگریزی زبان و ادب کی تعلیم دیتے ہیں۔ اردو اور انگریزی دونوں زبانوں میں نظم اور نثر نگاری پر قادر ہیں۔ ان کی تحاریر فلسفہ خودی اور خود اعتمادی کو اجاگر کرتی ہیں اور حسرت و یاس کے موسم کو فرحت و امید افزاء بہاروں سے ہمکنار کرتی ہیں۔ دین اسلام اور وطن کی محبت ان کی روح میں بسی ہے۔ اسی جذبے کے تحت ملک و ملت کی تعمیر و ترقی میں پیش پیش رہتے ہیں۔

تجویز کردہ

جماعت الدعوۃ پر پابندیاں اور اس کے جرائم

جماعت الدعوۃ پر پابندیاں اور اس کے جرائم  تحریر: اسد عباس خان چند روز پہلے …

کیا حکومت کالعدم ہونے جا رہی ہے؟ ۔۔۔ محمد نعیم شہزاد

کیا حکومت کالعدم ہونے جا رہی ہے؟ طرزِ نگارش: محمد نعیم شہزاد نیشنل ایکشن پلان …

Send this to a friend