صفحہ اول / مشق سخن / یومِ پاکستان اور ہماری ہماری ذمہ داریاں

یومِ پاکستان اور ہماری ہماری ذمہ داریاں

یوم پاکستان اور ہماری ذمہ داریاں
تحریر: محمد عبداللہ گل


آج 23 مارچ ہے یہ اس جلسہ کی یاد تازہ کراتا ہے جب قائداعظم کی صدارت میں قراردار پاکستان اے کے فضل الحق نے پیش کی ۔یہ قرارداد قرارداد پاکستان کہلائی۔ اس کے بعد انگریزوں نے مذاق اڑایا کسی نے اسے جناح کا پاکستان طنزیہ لہجے میں کہا۔ کسی نے اسے قرارداد پاکستان کہا مسلمان پہلے اسے قرارداد لاہور کہتے تھے لیکن قیادت مسلم لیگ نے اس اصطلاح کو مان لیا اور اسے آج بھی قرارداد پاکستان سے یاد کیا جاتا ہے۔ یہ قرارداد نظریہ پاکستان پر مبنی تھی۔ قائد اعظم محمد علی جناح اسلام کو ضابطہ حیات مانتے تھے ۔اس لیے اس قرارداد کے نظریے کو نظریہ اسلام ہی کہا جاتا ہے ۔نظریہ اسلام ہمیں لبرلزم نہی سکھاتا ۔آج کچھ لوگ کہتے ہیں کہ قائداعظم محمد علی جناح خود بھی لبرل تھے اور وہ لبرلزم کو پسند کرتے تھے یہ بالکل جھوٹ ہے ۔ہمیں اپنے اس ملک پاکستان میں نظریہ اسلام کو پھیلانا چاہیے جو کہ ہمیں اتحاد اور بھائی چارہ کی دعوت دیتا ہے۔ اس نظریہ پر ہی قائداعظم محمد علی جناح نے 14 اگست 1947 کو پاکستان بنایا تھا۔ آج ہمیں بھی نظریہ اسلام کو اجاگر کرنا چاہیے۔ اگر ہم اپنی سیاست، اپنی معاشرت، اپنی معیشت میں الغرض ہر شعبے میں نظریہ اسلام کو لائیں گے تو ہمارا ملک ترقی کرے گا ان شاءاللہ ۔جیسا کہ نظریہ اسلام ہمیں سود کے خاتمہ کا حکم دیتا ہے تو ہمیں سود کو ختم کر دینا چاہیے۔ اور اسی طرح دیگر اسلامی احکامات پر بھی قانون سازی کرنی چاہیے۔ موجودہ زمانے میں بہت لازم ہے کہ ہم اپنی پاک فوج کا ساتھ دیں۔ ان پر الزامات کی بوچھاڑ شروع ہوگئی ہے بعض عناصر بیرونی ممالک کی شہ پر ان کے خلاف پروپیگنڈا کرتے رہتے ہیں۔ اس پروپیگنڈہ کا خاتمہ کرنا ہے اسی طرح کچھ لوگ دشمنوں کی سازشوں کا نہ چاہتے ہوے بھی حصہ بن جاتے ہیں جیسا کے کل سانحہ کراچی ہوا مفتی تقی عثمانی صاحب پر حملہ ہوا یہ ایک بیرونی سازش تھی کہ علماء اور دینی طبقہ روڈ پر آ جائے اور ملک پاکستان کا امن برباد ہو جائے۔ آج پاکستان کو مدینہ ثانی کہا جاتا ہے ۔ پاکستان کو اللہ نے بہت ساری نعمتوں سے نوازا ہے یہ ساری نعمتیں اللہ تبارک و تعالی کا احسان ہے۔ ہمیں اپنی ملکی املاک کو نقصان نہیں پہنچانا چاہیے اس میں ہمارا ہی نقصان ہے۔ اسی طرح ہمیں اپنے ملک کے بہتر مستقبل کے لیے کوشاں رہنا چاہیے۔

متعلقہ محمد نعیم شہزاد

.......................... محمد نعیم شہزاد ایک ادبی، علمی اور سماجی شخصیت ہیں۔ لاہور کے ایک معروف تعلیمی ادارہ میں انگریزی زبان و ادب کی تعلیم دیتے ہیں۔ اردو اور انگریزی دونوں زبانوں میں نظم اور نثر نگاری پر قادر ہیں۔ ان کی تحاریر فلسفہ خودی اور خود اعتمادی کو اجاگر کرتی ہیں اور حسرت و یاس کے موسم کو فرحت و امید افزاء بہاروں سے ہمکنار کرتی ہیں۔ دین اسلام اور وطن کی محبت ان کی روح میں بسی ہے۔ اسی جذبے کے تحت ملک و ملت کی تعمیر و ترقی میں پیش پیش رہتے ہیں۔

تجویز کردہ

یومِ پاکستان، تجدیدِ عہد کا دن۔۔۔ محمد نعیم شہزاد

یومِ پاکستان، تجدیدِ عہد کا دن طرزِ نگارش: محمد نعیم شہزاد   زندگی کے نشیب …

قرارداد پاکستان ۔۔۔اسد عباس خان

قرار دادِ پاکستان اسد عباس خان مسلمان برصغیر میں ایک فاتح کی حیثیت سے آئے …

Send this to a friend