صفحہ اول / تہذیب و ثقافت / شور نہیں شعور ۔۔۔۔ تحریر : زین اللہ خٹک

شور نہیں شعور ۔۔۔۔ تحریر : زین اللہ خٹک

زندہ قومیں خوشیاں مناتی ہیں۔ لیکن خوشیاں منانے کے بھی کوئی اصول ہونے چاہئیں۔ حدود وقیود اور تہذیب لازم وملزم ہیں۔ کیونکہ خوشیاں تو صرف زندہ قومیں منا سکتی ہیں مردہ قوموں میں خوشیاں منانے کی سکت کہاں؟
تو بات ہورہی تھی خوشیاں منانے کی۔ 14 اگست یوم آزادی پر جس طرح قوم کے نوجوانوں نے خوشیاں منائیں اس طرح کم ازکم باشعور قومیں نہیں مناتیں۔ ایک طرف ملک خدادا معاشی مسائل کا شکار ہیں۔ ادارے تباہی کے کنارے پر ہیں۔ملک بیرونی قرضوں میں ڈوبا ہوا ہے تو دوسری طرف ہمارے شاہین کفایت شعاری کے بجائے موٹر سائیکلوں، گاڑیوں پر لاکھوں روپے کے جھنڈے اور میوزک لگا کر، سلنسرز سے عجیب وغریب آوازیں نکال کر، دن بھر سڑکوں پر لاکھوں روپے کے سی این جی اور پٹرول و ڈیزل کے خرچےکر کے ایک اندازے کے مطابق ایک ارب تیس کروڑ روپے خرچ کرتے رہے دوسری طرف گاڑیوں کے شور اور منچلے نوجوانوں کی خرمستیوں نے ذہنی سکون برباد کردیا۔ سڑکوں اور گلیوں میں بجانے والی آوازیں اور پٹاخوں سے بیمار اور بچے پریشان۔ سڑکوں پر منچلے نوجوانوں نے عورتوں پر جس طرح نعرے کسے۔ اخلاقیات کے دائرے سے نکل کر لڑکیوں کو چھیڑا گیا۔پارکوں میں گندگی پھیلا ئی گئی۔سرکاری املاک کو بھی معاف نہیں کیا گیا۔اسٹریٹ لائٹس اور سائین بورڈز اکھاڑے گے۔ کیا زندہ قوموں کو خوشیاں منانے کے لیے شعور کی ضرورت نہیں؟ کیا اس دفعہ کفایت شعاری سے یوم آزادی نہیں منایا جا سکتا تھا؟ ہمیں باشعور قوم بننا پڑے گا۔کیونکہ شعور سے ہی ہم دنیا میں اپنا کھویا ہوا مقام پا سکتے ہیں۔

 

آئیں مل کر عہد کریں کہ آئندہ ہم خوشیاں شور سے نہیں بلکہ شعور سے منائے گے۔

متعلقہ محمد نعیم شہزاد

.......................... محمد نعیم شہزاد ایک ادبی، علمی اور سماجی شخصیت ہیں۔ لاہور کے ایک معروف تعلیمی ادارہ میں انگریزی زبان و ادب کی تعلیم دیتے ہیں۔ اردو اور انگریزی دونوں زبانوں میں نظم اور نثر نگاری پر قادر ہیں۔ ان کی تحاریر فلسفہ خودی اور خود اعتمادی کو اجاگر کرتی ہیں اور حسرت و یاس کے موسم کو فرحت و امید افزاء بہاروں سے ہمکنار کرتی ہیں۔ دین اسلام اور وطن کی محبت ان کی روح میں بسی ہے۔ اسی جذبے کے تحت ملک و ملت کی تعمیر و ترقی میں پیش پیش رہتے ہیں۔

تجویز کردہ

‘ہے شعلوں کی لپیٹ میں جنتِ ارضی’ تحریر۔ جویریہ رزاق

"کشمیر " وہ خطہء جس کا نام لکھتے ہوئے دل غم سے پھٹنے لگے لکھتے …

مسئلہ کشمیر اور ہماری ذمہ داریاں ۔۔۔۔۔ تحریر : عاصم مجید لاہور

کشمیر کے لوگ آزادی کی جنگ لڑ رہے ہیں۔ کیا یہ جنگ محض اپنے لیے …

Send this to a friend

Hi, this may be interesting you: شور نہیں شعور ۔۔۔۔ تحریر : زین اللہ خٹک! This is the link: https://pakbloggersforum.org/how-should-we-celebrate-independence-day/