صفحہ اول / غلام زادہ نعمان صابری / جمالِ مصطفی، گوشہ سیرت ختم الرسل صلی اللہ علیہ وسلم سے انتخاب

جمالِ مصطفی، گوشہ سیرت ختم الرسل صلی اللہ علیہ وسلم سے انتخاب

ام المؤمنین حضرت عائشہ صدیقہ رضی اللہ عنہا فرماتی ہیں کہ ایک دن آقائے دو جہاں صلی اللہ علیہ وآلہ واصحابہ وبارک وسلم اپنے نعلین مبارک کو پیوند لگا رہے تھے او ر میں چرخہ کات رہی تھی۔
اچانک میری نظر حضور نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ واصحابہ وبارک وسلم کے چہرہ انور پر شرف زیارت کی غرض سے گئی تو میں نے دیکھا کہ آپ صلی اللہ علیہ وآلہ واصحابہ وبارک وسلم کی پیشانی مبارک پر پسینے کے چند قطرات نمایاں ہیں اور چمک رہے ہیں اور مجھے محسوس ہو رہا ہے کہ پسینہ کے اندر ایک نور ہے جو ابھر رہا ہے اور بڑھ رہا ہے۔
ام المؤمنین حضرت عائشہ صدیقہ رضی اللہ عنہا فرماتی ہیں کہ میرے لئے یہ ایک ایسا دلکش اور خوبصورت منظر تھا کہ میں حیرت و تعجب میں ڈوبی ہوئی پوری دلجمعی کے ساتھ کافی دیر تک آقائے دو جہاں صلی اللہ علیہ وآلہ واصحابہ وبارک وسلم کی جبیں مبارک کادیدار کرتی رہی۔
اچانک رسول اللہ صلی اللہ علیہ وآلہ واصحابہ وبارک وسلم نے جو نظر مبارک اُٹھا کر میری طرف دیکھاکہ میں آپ صلی اللہ علیہ وآلہ واصحابہ وبارک وسلم کی طرف حیرانگی کے ساتھ دیکھ رہی ہوں تو فرمایا:عائشہ! کیا بات ہے،کیوں حیران ہو کر میری طرف دیکھ رہی ہو؟
میں نے عرض کیا:یا رسول اللہ صلی اللہ علیہ وآلہ واصحابہ وبارک وسلم میں نے دیکھا ہے کہ آپ صلی اللہ علیہ وآلہ واصحابہ وبارک وسلم کی پیشانی مبارک پر پسینہ کے قطرات ہیں اور مجھے قطرات میں ایک چمکتا ہوا نور دکھائی دے رہا ہے۔
اس خوش کن اور مبارک منظر نے مجھے آپ صلی اللہ علیہ وآلہ واصحابہ وبارک وسلم کی طرف دیکھتے رہنے پر مجبور کر دیا ہے۔
ام المؤمنین حضرت عائشہ صدیقہ رضی اللہ عنہا نے فرمایابخدا! اگر "ابو کبیر ہذلی”زمانہ جاہلیت کا مشہور شاعر آج زندہ ہوتا اور وہ آپ صلی اللہ علیہ وآلہ واصحابہ وبارک وسلم کو دیکھ لیتا تو اسے معلوم ہوتا کہ اس کے اشعار کا صحیح مصداق رسول اللہ صلی اللہ علیہ وآلہ واصحابہ وبارک وسلم کی ذات اقدس ہے۔

نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ واصحابہ وبارک وسلم نے ام المؤمنین حضرت سیدہ عائشہ صدیقہ رضی اللہ عنہا سے ارشاد فرمایا: ہمیں بھی تو سنائیں اس کے اشعار کیا ہیں؟
ام المؤمنین حضرت عائشہ صدیقہ رضی اللہ عنہا فرماتی ہیں کہ میں نے حضور نبی کریم صلی اللہ علیہ وآلہ واصحابہ وبارک وسلم کوابو کبیر ہذلی کے یہ اشعار سنائے:
ترجمہ:….”وہ ولادت اور رضاعت کی آلودگیوں سے پاک ہے اس کے روشن چہرے کودیکھو تو معلوم ہوگا کہ نور اورروشن برق جلوہ دے رہی ہے۔”
جب رسول اللہ صلی اللہ علیہ وآلہ واصحابہ وبارک وسلم نے یہ اشعار سماعت فرمائے تو جو کچھ ہاتھ میں تھا وہ رکھا اور ام المؤمنین حضرت سیدہ عائشہ صدیقہ رضی اللہ عنہا سے فرمایا:جو لطف و راحت مجھے آپ کے کلام سے حاصل ہوئی ہے اس قدر مسرت و سرور آپ کو میرے نظارے سے بھی حاصل نہ ہوا ہوگا۔
حوالہ جات۔۔۔۔۔درج ذیل کتب سے ہیں
(مستدرک حاکم،مدارج السالکین،ص 277۔مصر بحوالہ سیرت عائشہ رضی اللہ عنہا،ص252)
(کتاب :حضرت عائشہ رضی اللہ عنہا کے 100 قصّے

متعلقہ محمد نعیم شہزاد

.......................... محمد نعیم شہزاد ایک ادبی، علمی اور سماجی شخصیت ہیں۔ لاہور کے ایک معروف تعلیمی ادارہ میں انگریزی زبان و ادب کی تعلیم دیتے ہیں۔ اردو اور انگریزی دونوں زبانوں میں نظم اور نثر نگاری پر قادر ہیں۔ ان کی تحاریر فلسفہ خودی اور خود اعتمادی کو اجاگر کرتی ہیں اور حسرت و یاس کے موسم کو فرحت و امید افزاء بہاروں سے ہمکنار کرتی ہیں۔ دین اسلام اور وطن کی محبت ان کی روح میں بسی ہے۔ اسی جذبے کے تحت ملک و ملت کی تعمیر و ترقی میں پیش پیش رہتے ہیں۔

تجویز کردہ

سنیپ چیٹ اسلامی تعلیمات کے آئینے میں

چند دن قبل کچھ پرانے دوست اکھٹے ہوئے۔ کچھ انجینیئرنگ کے سٹوڈنٹس اور کچھ ایم …

محمد صلی اللہ علیہ وسلم ، ایک عالمگیر شخصیت ۔۔۔ رحمت اللہ شیخ

امام الانبیاء حضرت محمدﷺ اللہ تعالیٰ کے آخری پیغمبر اور رسول ہیں۔ اللہ تعالیٰ نے …

Send this to a friend

Hi, this may be interesting you: جمالِ مصطفی، گوشہ سیرت ختم الرسل صلی اللہ علیہ وسلم سے انتخاب! This is the link: https://pakbloggersforum.org/jamal-e-mustafa/