صفحہ اول / اردو ادب / جواب شکوہ بند نمبر 18 از عرفان صادق

جواب شکوہ بند نمبر 18 از عرفان صادق

جواب شکوہ 

بند نمبر 18

عرفان صادق

دمِ تقریر تھی مسلم کی صداقت بے باک
عدل اس کا تھا قوی، لوثِ مراعات سے پاک
شجَرِ فطرتِ مسلم تھا حیا سے نم ناک
تھا شجاعت میں وہ اک ہستیِ فوق الادراک
خود گدازی نمِ کیفیّت صہبایش بود
خالی از خویش شُدن صورتِ مینایش بود

📕کتاب۔ بانگِ درا

⭕نظم۔ جوابِ شکوہ
بند نمبر۔ اٹھارہ

♨مشکل الفاظ۔ بیباک۔ بے خوف، لوث۔ آلودگی۔ نمناک۔ تازہ۔ فوق الادراک۔ عقل سے بالا تر۔ خودگدازی۔ خود کو پگھلانا، طبیعت کی نرمی
صہبایش بود۔ سرخ شراب کی مانند۔ خالی ازخویش شدن۔ خود غرضی سے خود کو علیحدہ رکھنا۔ مینایش۔شراب سے خالی صراحی ک مانند

💢مفہوم ۔ وہ وقت بھی تھا جب خطاب کے دوران مسلمان مقرر کی تقریر صداقت اور جرأت و بیباکی کی آٸینہ دار ہوتی تھی۔ عدل و انصاف کے دوران ہر طرح کی رعایتوں سے گریز کرتے تھےوہ فطرت کے اعتبار سے اس درخت کے مانند تھے جو سدا تروتازہ رہتا ہے۔ شرم و حیا اس کا زیور تھے جرأت و شجاعت پر مبنی اس کی صلاحيتوں کا عقل و شعور تصور بھی نہیں کر سکتے تھے۔
اس بند کےآخری شعر میں نبی اکرم ﷺ کے بعد کے دور کے مسلمانوں کی طرف اشارہ کیا گیا ہے کہ وہ باہم ایثار سے کام لیا کرتے تھے۔ دوسروں کے دکھ درد کو اپنا دکھ درد سمجھتے تھے۔ ہمیشہ ضرورت مندوں کے کام آتے تھے اور اپنے اعمال کو ذاتی مفاد سے آلودہ نہیں کرتے تھے۔

متعلقہ نعیم شہزاد

.......................... محمد نعیم شہزاد ایک ادبی، علمی اور سماجی شخصیت ہیں۔ لاہور کے ایک معروف تعلیمی ادارہ میں انگریزی زبان و ادب کی تعلیم دیتے ہیں۔ اردو اور انگریزی دونوں زبانوں میں نظم اور نثر نگاری پر قادر ہیں۔ ان کی تحاریر فلسفہ خودی اور خود اعتمادی کو اجاگر کرتی ہیں اور حسرت و یاس کے موسم کو فرحت و امید افزاء بہاروں سے ہمکنار کرتی ہیں۔ دین اسلام اور وطن کی محبت ان کی روح میں بسی ہے۔ اسی جذبے کے تحت ملک و ملت کی تعمیر و ترقی میں پیش پیش رہتے ہیں۔

تجویز کردہ

جواب شکوہ بند نمبر 17 ۔۔۔ عرفان صادق

جواب شکوہ بند نمبر 17 سلسلہ اقبالیات از عرفان صادق  شور ہے ہو گئے دنیا …

جواب شکوہ از عرفان صادق

واعظِ قوم کی وہ پُختہ خیالی نہ رہی برق طبعی نہ رہی، شُعلہ مقالی نہ …

Send this to a friend

Hi, this may be interesting you: جواب شکوہ بند نمبر 18 از عرفان صادق! This is the link: https://pakbloggersforum.org/jawab-e-shikwa-18-irfan-sadiq/