صفحہ اول / عرفان صادق / نوائے اقبال (22)شرح بانگ درا

نوائے اقبال (22)شرح بانگ درا

جان جائے ہاتھ سے نہ ست
ہے یہی اک بات ہر مذہب کا تت

چٹے بٹے ایک ہی تھیلی کے ہیں
ساہو کاری، بسوہ داری، سلطنت

📚بانگِ درا

🖋نظم :ظریفانہ

نمبر: 22

📝فرہنگ:
ست: سچ
تت: روح
چٹے بٹے: ایک جیسے
ساہو کاری: تجارت، ۔سودا گری
بسوہ داری: زمین داری

🖋مفہوم:
علامہ اقبال رحمہ اللہ علیہ فرماتے ہیں، سچ ایسی صفت ہے جو ہر مذہب کی روح ہے، خواہ کیسے ہی حالات کیوں نہ ہو سچ بات کہنے سے گھبرانا نہیں چاہیے۔ یہ زمیندار، تاجر، حکمران سب کے سب ایک جیسے ہیں، ان کا کام عوام کا خون چوسنا ہے۔ لہذا کسی کے ڈر سے حق نہ چھپاؤ۔

متعلقہ محمد نعیم شہزاد

.......................... محمد نعیم شہزاد ایک ادبی، علمی اور سماجی شخصیت ہیں۔ لاہور کے ایک معروف تعلیمی ادارہ میں انگریزی زبان و ادب کی تعلیم دیتے ہیں۔ اردو اور انگریزی دونوں زبانوں میں نظم اور نثر نگاری پر قادر ہیں۔ ان کی تحاریر فلسفہ خودی اور خود اعتمادی کو اجاگر کرتی ہیں اور حسرت و یاس کے موسم کو فرحت و امید افزاء بہاروں سے ہمکنار کرتی ہیں۔ دین اسلام اور وطن کی محبت ان کی روح میں بسی ہے۔ اسی جذبے کے تحت ملک و ملت کی تعمیر و ترقی میں پیش پیش رہتے ہیں۔

تجویز کردہ

محمد(صلی اللّٰہ علیہ وسلم):ایک عالمگیر شخصیت۔۔۔ !!! بقلم: جویریہ بتول

محمد(صلی اللّٰہ علیہ وسلم):ایک عالمگیر شخصیت۔۔۔ !!! بقلم:(جویریہ بتول۔ انسانیت کے اصول سے انسان ہی …

محمد(صلی اللہ علیہ وسلم)۔۔۔ایک عالمگیر شخصیت۔۔۔ !!!! تحریر: مریم بتول

عالمگیر نبوت کا فرض لیے،ختم نبوت کا تاج سجائے،پیارے نبی حضرت محمد صلی اللہ علیہ …

Send this to a friend

Hi, this may be interesting you: نوائے اقبال (22)شرح بانگ درا! This is the link: https://pakbloggersforum.org/nawai-iqbal-22/