صفحہ اول / عرفان صادق / نوائے اقبال (4) از عرفان صادق

نوائے اقبال (4) از عرفان صادق

یہ کوئی دن کی بات ہے، اے مرد ہوش مند!
غیرت نہ تجھ میں ہو گی نہ زن اوٹ چاہے گی
آتا ہے اب وہ دور، کہ اولاد کے عوض
کونسل کی ممبری کے لیے ووٹ چاہے گی۔

📚کتاب ۔بانگ درا۔
نظم ظریفانہ۔ نمبر4۔

📝مشکل الفاظ کے معانی:

غیرت۔شرم و حیا
زن۔ عورت
عوض۔ بدلہ
اوٹ۔ پردہ ۔آڑ

🖋مفہوم۔
علامہ محمد اقبال اس قطعہ میں جدید دور کی معاشرت پر گہرا طنز کر رہے ہیں۔ اے ہوش مند انسان! وہ وقت زیادہ دور نہیی کہ تجھ میں۔ غیرت باقی نہ رہے گی۔ اور نہ ہی آج کے دور کی۔ عورت پردے میں۔ رہنا۔ پسند کرے گی۔ اور نہ مرد اسکی بے حجابی پر متعرض ہو گا اور وہ وقت قریب ہے جب اسے اولاد کی۔ پرواہ نہ رہے گی۔ اس کا اصل مقصد سیاست میں شہرت کمانا اورووٹ کی طلب ہو گا۔

متعلقہ محمد نعیم شہزاد

.......................... محمد نعیم شہزاد ایک ادبی، علمی اور سماجی شخصیت ہیں۔ لاہور کے ایک معروف تعلیمی ادارہ میں انگریزی زبان و ادب کی تعلیم دیتے ہیں۔ اردو اور انگریزی دونوں زبانوں میں نظم اور نثر نگاری پر قادر ہیں۔ ان کی تحاریر فلسفہ خودی اور خود اعتمادی کو اجاگر کرتی ہیں اور حسرت و یاس کے موسم کو فرحت و امید افزاء بہاروں سے ہمکنار کرتی ہیں۔ دین اسلام اور وطن کی محبت ان کی روح میں بسی ہے۔ اسی جذبے کے تحت ملک و ملت کی تعمیر و ترقی میں پیش پیش رہتے ہیں۔

تجویز کردہ

گھر کی خاطر

آج میں بہت غمگین تھا کیوں کہ ہم نے بیرونی دباؤ کی خاطر ، ہمیں …

تنظیمی کلچر

زیادہ دن پرانی بات نہیں ایک لنڈے کے کامریڈ سستے انقلابی کو سمجھا رہا تھا …

Send this to a friend

Hi, this may be interesting you: نوائے اقبال (4) از عرفان صادق! This is the link: https://pakbloggersforum.org/nawai-iqbal-4/