صفحہ اول / عرفان صادق / نوائے اقبال شرح بانگِ درا (ہمالہ بند 4)

نوائے اقبال شرح بانگِ درا (ہمالہ بند 4)

ابر کے ہاتھوں میں رہوار ہوا کے واسطے
تازیانہ دے دیا برقِ سرِ کہسار نے
اے ہمالہ کوئی بازی گاہ ہے تو بھی جسے
دست قدرت نے بنایا ہے عناصر کے لیے
ہائے کیا فرطِ طرب میں جھومتا جاتا ہے ابر..!
فیلِ بے زنجیر کی صورت اڑ جاتا ہے ابر..!

📚بانگ دعا
نظم۔ ہمالہ
بند نمبر 4

📝فرہنگ۔
رہوار۔ گھوڑا
برق۔بجلی
بازی گاہ۔کھیل کا میدان
فرط طرب۔زیادہ خوشی
بےزنجیر۔ بےلگام
کہسار۔ پہاڑ
فیل۔ ہاتھی

✒مفہوم۔
حکیم الامت علامتوں اور اشتہاروں کو کمال سے برتتے ہیں۔فرماتے ہیں۔اے میرے ہمالہ تیرے گردوپیش میں چلتی تیز ہوائیں گھوڑے کی مانند ہیں اور تیری چوٹیوں کی چمک بجلی بن کر کوڑے کا کام کرتی ہے اور اس رفتار کو اور بھی تیز کرتی ہے۔اور اے ہمالہ تو گویا کھیل کا میدان ہے جسے قدرت کے عناصر کے کھیل کے لیے تشکیل دیا ہے۔تیرے ارد گرد بادل خوشی سے جھوم کر ایسا نظارہ پیش کرتا ہے گویا مست ہاتھی ہو جس پر قابو ممکن ہی نہیں ہوتا۔ اے میرے ہمالہ تیری صفات ہر کہسار سے الگ تھلگ ہیں۔

متعلقہ محمد نعیم شہزاد

.......................... محمد نعیم شہزاد ایک ادبی، علمی اور سماجی شخصیت ہیں۔ لاہور کے ایک معروف تعلیمی ادارہ میں انگریزی زبان و ادب کی تعلیم دیتے ہیں۔ اردو اور انگریزی دونوں زبانوں میں نظم اور نثر نگاری پر قادر ہیں۔ ان کی تحاریر فلسفہ خودی اور خود اعتمادی کو اجاگر کرتی ہیں اور حسرت و یاس کے موسم کو فرحت و امید افزاء بہاروں سے ہمکنار کرتی ہیں۔ دین اسلام اور وطن کی محبت ان کی روح میں بسی ہے۔ اسی جذبے کے تحت ملک و ملت کی تعمیر و ترقی میں پیش پیش رہتے ہیں۔

تجویز کردہ

محمد صلی اللہ علیہ وسلم فاتح عالم، غلام زادہ نعمان صابری

محمد صلی اللہ علیہ وسلم فاتح عال نبی مکرم صلی اللہ علیہ وآلہ واصحابہ وبارک …

مدحتِ خیر البشر صلی اللہ علیہ وسلم، اشتراک : عبدالرب ساجد

ظاھر الوضاء ۔ چمکتا رنگ ابلج الوجه ۔ تابناک چہرہ حسن الخلق ۔ خوبصورت ساخت …

Send this to a friend

Hi, this may be interesting you: نوائے اقبال شرح بانگِ درا (ہمالہ بند 4)! This is the link: https://pakbloggersforum.org/nawai-iqbal-hamala-4/