صفحہ اول / Tag Archives: علامہ محمد اقبال (صفحہ 3)

Tag Archives: علامہ محمد اقبال

سلسلہ اقبالیات از عرفان صادق

سلسلہ اقبالیات از: عرفان صادق بس رہے تھے یہیں سلجوق بھی تورانی بھی اہل چیں چین میں،ایران میں ساسانی بھی اسی معمورے میں آباد تھے یونانی بھی اسی دنیا میں یہودی بھی تھے، نصرانی بھی پر ترے نام پہ تلوار اٹھائی کس نے؟ بات جو بگڑی ہوئی تھی،وہ بنائی کس …

مزید پڑھیں

سلسلہ اقبالیات از عرفان صادق

سلسلہ اقبالیات از: عرفان صادق ع ہم سے پہلے تھا عجب تیرے جہاں کا منظر کہیں مسجود تھے پتھر ، کہیں معبود شجر خوگر پیکر محسوس تھی انساں کی نظر مانتا پھر کوئی ان دیکھے خدا کیونکر؟ تجھ کو معلوم ہے لیتا تھا کوئی نام ترا؟ قوت بازوئے مسلم نے …

مزید پڑھیں

سلسلہ اقبالیات از عرفان صادق

سلسلہ اقبالیات از: عرفان صادق ہے بجا شیوہء تسلیم میں مشہور ہیں ہم قصہء درد سناتے ہیں کہ مجبور ہیں ہم ساز خاموش ہیں، فریاد سے معمور ہیں ہم نالہ آتا ہے اگر لب پہ، تو معذور ہیں ہم اے خدا! شکوہء اربابِ وفا بھی سن لے خوگرِ حمد سے …

مزید پڑھیں

سلسلہ اقبالیات از عرفان صادق

سلسلہ اقبالیات از: عرفان صادق کیوں زیاں کار بنوں سود فراموش رہوں؟ فکرِ فردا نہ کروں، محوِغمِ دوش رہوں۔ نالےبلبل کے سنوں ،اور ہمہ تن گوش رہوں ہمنوا!میں بھی کوئی گل ہوں کہ خاموش رہوں جرات آموز مری تابِ سخن ہے مجھ کو شکوہ اللہ سے خاکم بدہن، ہے مجھ …

مزید پڑھیں

سلسلہ اقبالیات از عرفان صادق

سلسلہ اقبالیات از: عرفان صادق دیکھ کر رنگِ چمن ہو نہ پریشاں مالی کوکبِ غنچہ سے شاخیں ہیں چمکنے والی خس و خاشاک سے ہوتا ہے گلستاں خالی گل بر انداز ہے خون شہدا کی لالی رنگ گردوں کا ذرا دیکھ تو عنابی ہے یہ نکلتے ہوئے سورج کی افق …

مزید پڑھیں

سلسلہ اقبالیات از عرفان صادق

سلسلہ اقبالیات  از: عرفان صادق اے باد صبا کملی والے سے جا کہیو پیغام مرا قبضے سے امت بے چاری کے دیں بھی گیا دنیا بھی گئی یہ موجِ پریشاں خاطر کو پیغام لبِ ساحل نے دیا ہے دور وصالِ بحر ابھی تو دریا میں گھبرا بھی گئی ⭕کتاب….بانگ دراز …

مزید پڑھیں

سلسلہ اقبالیات از عرفان صادق

سلسلہ اقبالیات عرفان صادق تو شناسائے خراش عقدہ مشکل نہیں اے گل رنگیں ترے پہلو میں شاید دل نہیں زیب محفل ہے شریکِ شورش محفل نہیں یہ فراغت بزم ہستی میں مجھے حاصل نہیں اس چمن میں، میں سراپا سوز و سازِ آرزو اور تیری زندگانی بے گداز آرزو ⭕کتاب: …

مزید پڑھیں

سلسلہ اقبالیات از عرفان صادق

سلسلہ اقبالیات  از: عرفان صادق  برتر از اندیشہ سود و زیاں ہے زندگی ہے کبھی جاں اور کبھی تسلیم جاں ہے زندگی تو اسے پیمانہ امروزوفردا سے نہ ناپ جاوداں پیہم دواں،ہر دم جواں ہے زندگی ⭕کتاب۔۔۔۔بانگ درا نظم۔۔۔۔زندگی ♨مشکل الفاظ کے معانی برتر از اندیشہ ۔۔۔۔۔وسوسوں سے بالا۔۔۔۔وسوسوں سے …

مزید پڑھیں

سلسلہ اقبالیات از عرفان صادق

سلسلہ اقبالیات از عرفان صادق نشہ پلا کے گرانا تو سب کو آتا ہے مزہ تو جب ہے کہ گِرتوں کو تھام لے ساقی جو بادہ کش تھے پرانے، وہ اٹھتے جاتے ہیں کہیں سے آبِ بقائے دوام لے ساقی! کٹی ہے رات تو ہنگامہ گُستری میں تری سحر قریب …

مزید پڑھیں

سلسلہ اقبالیات از: عرفان صادق پوچھ اس سے کہ مقبول ہے فطرت کی گواہی تو صاحبِ منزل ہے، کہ بھٹکا ہوا راہی! کافر ہے مسلماں، تو نہ شاہی،نہ فقیری مومن ہے تو کرتا ہے فقیری میں بھی شاہی کافر ہے تو شمشیر پہ کرتا ہے بھروسا مومن ہے تو بےتیغ …

مزید پڑھیں

Send this to a friend