صفحہ اول / بین الاقوامی / سکے کے دورخ، ایران اور امریکہ۔۔۔ حافظ ابتسام الحسن

سکے کے دورخ، ایران اور امریکہ۔۔۔ حافظ ابتسام الحسن

یہ بات عین الیقین ہے کہ امریکہ ایرنیوں کو مسلم ممالک کا حصہ نہیں سمجھتا، ورنہ ان کا خون بہانے میں کبھی دریغ نہ کرتا، میں نے بات بہت بڑی لکھ دی ہے، مگر میری اس بات کو تقویت اسی بات سے باآسانی مل جاتی ہے کہ امریکہ بہادر نے ایران پر حملہ اس لیے نہیں کیا کہ ڈیڑھ سو ایرانی افراد کے قتل کا اندیشہ تھا ۔حیرانی ہے انکل سام اچانک اتنا دیالو کیسے ہو گیا ۔جس نے آدھی دنیا پھونک ڈالی، انسانوں کی بستی کا ایک تہائی حصہ قتل کر ڈالا، اسے محض ڈیڑھ سو افراد کی فکر ٹھہری ۔یہ میں کیا دیکھ رہا ہوں، کیا سچ میں امریکہ بہادر نیک ہو گیا ہے، کیا واقعی امریکہ نے قتل و غارت سے توبہ کرلی ہے؟

نہیں جناب! امریکہ اور قتل و غارت گری سے توبہ، یہ دونوں متضاد چیزیں ہیں، جس طرح مشرق اور مغرب نہیں مل سکتے، جس طرح زمین و آسمان کا ملاپ نہیں ہو سکتا، بعینہ امریکہ کا قتل و غارت سے توبہ کرنا، انسانیت بالخصوص مسلمانوں کی فکر کرنا، کبھی اکٹھے نہیں ہوسکتے ۔

ایران ظاہری طور پر خود کو امریکہ کا سب سے بڑا دشمن ظاہر کرتا ہے، آئے روز امریکہ کے خلاف شدید ترین بیان بھی داغتا رہتا ہے، امریکہ بھی جواباً معمول کے بیان دیتا رہتا ہے، مگر یہ سب کچھ بیان بازی تک ہی محدود رہتا ہے، بیان بازی بھی فقط دنیا کی میں آنکھوں میں دھول جھونکنے کے لیے ڈرامہ ہے ۔حقیقت میں دونوں کا مقصد ایک ہی ہے، دونوں ایک ہی پلیٹ فارم پر جمع ہیں ۔

کیا وجہ ہے دو طرفہ اتنی شدید بیان بازی کے باوجود دونوں ملکوں میں آج تک چند منٹ کی بھی جنگ نہیں ہوئی، جب کہ امریکہ نے ان ممالک کی دھجیاں بکھیر کر رکھ دی ہیں جو ہمیشہ چپ چاپ رہے اور کبھی امریکہ کے آڑے نہیں آئے ۔مگر ایرانی صدور موجودہ اور سابقہ ہمیشہ امریکہ کے خلاف بول کر ہی لوگوں کی نظر میں ہیرو بنتے رہے ہیں ۔

یہ بات کسی سے ڈھکی چھپی نہیں کہ امریکہ کھلم کھلا مسلمانوں کا دشمن ہے، ہمیشہ ان کا برا ہی چاہا ہے، اس لحاظ سے ایران کو مسلمانوں کے ساتھ کھڑا ہونا چاہیے، دکھ سکھ میں ان کا ساتھی اور شریک ہونا چاہیے، مسلمانوں کی حمایت اور نصرت کے لیے عملی اقدامات اٹھانے چاہئیں۔ مگر ایران نے جب بھی منہ کھولا مسلمانوں کے خلاف ہی زہر اگلا ۔

حرمین شریفین سے امت مسلمہ کی محبت و مذہبی عقیدت فطری ہے ۔حرمین شریفین ہر مسلمان کی آنکھوں کی ٹھنڈک، دل کا قرار ہیں، دنیا بھر میں ایک مثالی امن کی جگہ ہیں، مگر کیا کریں ایران کا، اس نے حرمین شریفین کو جب بھی دیکھا کھا جانے والی اور لالچی نظروں سے ہی دیکھا، اس کے دل میں حرمین شریفین کی محبت کی بجائے قبضے کا بغض چھپا ہوا ہے۔

پاکستان دنیا میں اسلام کا قلعہ ہے، پاک فوج امت مسلمہ کی امیدوں کا مرکز و محور ہے، اس کے ایٹمی صلاحیت ہونے پر امت مسلمہ نازاں و فرحاں ہے، آج اپنے تو کیا روس اور چین ایسے بیگانے بھی پاکستان کے ساتھ کندھے سے کندھا ملا کر کھڑے ہیں ۔مگر ایران پاکستان کا ہمسایہ ملک ہونے کے باوجود کبھی پاکستان کے ساتھ کھڑا نہیں ہوا ، بلکہ اس نے ہر نازک موقع پر پاکستان کو زخم دینے کی بھرپور کوشش کی ہے، آج اگر امریکہ کو سب سے زیادہ تکلیف پاکستان سے ہے تو ایران کو بھی سب سے زیادہ تکلیف پاکستان کے وجود سے ہی ہوتی ہے، ایرانی کارندوں نے ہمارے ہاں ہزاروں مرتبہ پاکستان میں فساد پھیلانے کی سعی لاحاصل کی ہے ،اور ابھی تک کررہے ہیں، بلکہ اب مزید شدت سے کر رہے ہیں۔

نتیجہ یہ نکلتا ہے کہ نہ امریکہ ایران کو اپنا دشمن تصور کرتا ہے، اور نہ ایران امریکہ کو بزرگ شیطان سمجھتا ہے، جو دکھتا ہے وہ بس ان کے منہ کی باتیں ہیں ۔دونوں مل کر عالم اسلام کی جڑوں کو کھوکھلا کرنا چاہتے ہیں، ایک عیسائیت کا علمبردار ہے تو دوسرا اپنی مخصوص سوچ کا، خواب دونوں کا ایک ہی ہے، عالم اسلام پر حکومت اور تسلط۔
ضرورت اس امر کی ہے کہ اس دو رخی کو سمجھا جائے اور ان کے اس مشن کو ناکام کیا جائے۔

متعلقہ محمد نعیم شہزاد

.......................... محمد نعیم شہزاد ایک ادبی، علمی اور سماجی شخصیت ہیں۔ لاہور کے ایک معروف تعلیمی ادارہ میں انگریزی زبان و ادب کی تعلیم دیتے ہیں۔ اردو اور انگریزی دونوں زبانوں میں نظم اور نثر نگاری پر قادر ہیں۔ ان کی تحاریر فلسفہ خودی اور خود اعتمادی کو اجاگر کرتی ہیں اور حسرت و یاس کے موسم کو فرحت و امید افزاء بہاروں سے ہمکنار کرتی ہیں۔ دین اسلام اور وطن کی محبت ان کی روح میں بسی ہے۔ اسی جذبے کے تحت ملک و ملت کی تعمیر و ترقی میں پیش پیش رہتے ہیں۔

تجویز کردہ

عالمی امن پر منڈلاتے خطرات

آپ بھی جان لیں کہ اقوام متحدہ کی مستقل رکنیت رکھنے والے ممالک کے مابین 145 …

مسئلہ کشمیر، امریکہ اور ہمارے ماضی کے حکمران

پاکستان نے اپنے قیام کے ساتھ ہی امریکہ سے دوستی اور اپنے تعلقات قائم کر …

Send this to a friend

Hi, this may be interesting you: سکے کے دورخ، ایران اور امریکہ۔۔۔ حافظ ابتسام الحسن! This is the link: https://pakbloggersforum.org/two-faces-of-the-coin/